تازہ ترین
زبیر گل کے خلاف ہونے والی سازش تمام تارکین وطن کے خلاف سازش ہے ،لیگی عہدیداران         مسلم لیگ ن سپین کے صدر ایاز عباسی اور سرپرست اعلی حاجی اسد حسین کی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی انوشہ رحمان سے ملاقات         پاکستانی کمیونٹی کے مسائل کا حل اؤلین ترجیح ہو گی ، خیام اکبرسفیر پاکستان میڈرڈ         مسلم لیگ ن سپین آج شام سات بجے کایئے چلی میں جشن منائے گی ، مٹھائی تقسیم کی تقریب بھی ہو گی         کشمیریوں پر ایک ماہ میں 13 لاکھ پیلٹ گنز فائر کیےگئے،کشمیر پولیس         چار روزہ ورلڈ موبائل کانگریس بارسلوناکا اختتام ، انوشہ رحمان کی شرکت         سوسائٹی فار کرائسٹ اور مسلم لیگ ن سپین کی سانحہ شاہدرہ پر مشترکہ پریس کانفرنس         پاکستانی سیاست کے یورپی ممالک میں مقیم پاکستانیوں پر اثرات ، پاک نیوز سروے رپورٹ         MWC 2018: the biggest news from Mobile World Congress in Barcelona         پاکستان پیپلز پارٹی برطانیہ میں تقرریوں کا سلسلہ جاری         بھارتی لیجنڈری اداکارہ سری دیوی انتقال کرگئیں         کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے لاہور قلندرز کو 9 وکٹوں سے ہرا دیا         ویسٹ انڈیز کا دورئہ پاکستان خطرات سے دوچار         سائرہ پیٹر کی پی لیک فیسٹیول میں شاندار پرفارمنس         اردوان نے اپنے بدترین دشمن سے ہاتھ ملا لیا        
shafqat-ali-raza

کشمیر سیمینار کا انعقاد ۔ شفقت علی رضا

سپین کے صوبہ کاتالونیا کے دارلحکومت بارسلونا میں پاکستان پیپلز پارٹی سپین کے زیر اہتمام ’ کشمیر سیمینار ‘‘ منعقد ہوا جس کے مہمان خصوصی صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ سندھ سید ناصر شاہ تھے ۔ سیمینار کا آغاز تلاوت کلام سے کیا گیا جس کی سعادت محمد علی نے حاصل کی اور نعت رسول مقبول ﷺ پڑھنے کی بھی سعادت حاصل کی ۔کشمیر سیمینار کی صدارت پیپلز پارٹی سپین کے صدر عمر فاروق رانجھا نے کی ۔سیمینار ترتیب تو پیپلز پارٹی نے دیا تھا لیکن اس میں پاکستان کی دوسری سیاسی جماعتوں کے نمائندگان اور عہدیداران نے بھی شرکت کی اور ثابت کیا کہ ہمارے سیاسی اختلافات اپنی جگہ لیکن ہم سب سیاسی جماعتیں مسئلہ کشمیر پر متحد ہیں اور پاکستان کی تمام عوام کے ساتھ مل کر اپنی پاک آرمی کے شانہ بشانہ کھڑے ہوئے ہیں اگر خدانخواستہ کبھی ہمارے ملک کو ہماری جان کی ضرورت پڑی تو ہم دینے سے دریغ نہیں کریں گے یہ وہ جذبہ تھا جو کشمیر سیمینار میں موجود ہر فرد کا تھا ۔جس طرح سپین میں پیپلز پارٹی کو احسن انداز سے آرگنائز کرنے اور رکھنے کا سہرا حافظ عبدالرزاق صادق کے سر ہے اسی طرح ’’ کشمیر سیمینار ‘‘ کو آرگنائز کرنے میں بھی انہوں نے دن رات کوشش کی تھی ۔مظہر بٹ آف پھالیہ اور عامر حسین نے اس سیمینار میں شرکت کرنے کے لئے صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ سندھ سید ناصر شاہ کو خصوصی دعوت دی تھی کہ وہ بطور مہمان خصوصی اس سیمینار میں شرکت کریں ، ناصر شاہ جو اپنے وفد کے ساتھ سپین میں جاری ٹرانسپورٹ کانفرنس میں شمولیت کے لئے پاکستان سے آئے تھے نے اس دعوت کو قبول کیا اور کشمیر سیمینار میں شرکت کے لئے خصوصی وقت نکالا ۔مقامی ریسٹورنٹ کے خوبصورت ہال میں ترتیب دئیے گئے اس سیمینار میں کشمیری اور پاکستانی کمیونٹی نے بڑے جذبے اور عزم کے ساتھ شرکت کی تھی ۔پیپلز پارٹی آزاد کشمیر کے جیالے کارکن طارق جمال گجر نے انڈیا حکومت اور انڈین آرمی کے خلاف فلک شگاف نعروں سے فضا کے جوش و جذبہ کو بڑھائے رکھا انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ انڈیا اگر 70سالوں میں کشمیری حریت پسندوں کی آزادی کی تحریک کو ختم نہیں کر سکا تو اب وہ جتنے مظالم بھی ڈھا لے کشمیری اپنی آزادی حاصل کرنے تک اپنی آواز بھی بلند رکھیں گے اور تب تک وہ کسی بھی جانی و مالی قربانی دینے سے گریز نہیں کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ وہ دن دور نہیں جب آزادی کے سورج کی کرنیں مقبوضہ کشمیر کی سر زمین کو روشن کریں گی ۔پیپلز پارٹی سپین کے جنرل سیکرٹری ساجد حسین گوندل نے اس موقع پر انتہائی جذباتی انداز میں خطاب کیا جس پر پورا ہال کھڑے ہو کر تالیاں بجاتا رہا ۔ان کا خطاب کا عنوان ہندو بنیا اور آزادی کشمیر تھا ۔انہوں نے اپنے خطاب میں انڈین آرمی کی کشمیر میں جاری جارحیت کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس ظلم و تشدد پر ساری دنیا سراپا احتجاج ہے لیکن دنیا کی بڑی طاقتوں اور اقوام متحدہ کی آنکھیں بند ہیں جو ایک سوالیہ نشان ہے ۔پیپلز پارٹی کے صدر عمر فاروق رانجھا نے کہا کہ کشمیریوں کی آزادی تک ہم مقبوضہ کشمیر میں جارحیت کے خلاف آواز اٹھاتے رہیں گے اور انڈیا کو بتا دینا چاہتے ہیں کہ وہ ایسے اوچھے ہھتکنڈوں سے باز آ جائے ورنہ برصغیر پاک و ہند میں ایٹمی جنگ کے آغاز ہوگا اور انڈیا نیست و نابود ہو جائے گا ۔پیپلز پارٹی کے آرگنائزر حافظ عبدالرزاق صادق نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو مذاکرات کی میز پر حل کرنا پاکستان کی اولین خواہش ہے کیونکہ ہمارا ملک امن پسند ملک ہے اس عمل کو ہماری بزدلی نہ سمجھا جائے ۔فالکن ایسوسی ایشن کے صدر میاں ممتاز دانش نے اپنے خطاب میں کہا کہ انڈیا کو چاہئیے کہ وہ اقوام متحدہ کی قرادادوں کے مطابق کشمیریوں کو جینے کا حق دے ۔کشمیری راہنما سید سعید شاہ نے اپنے خطاب میں کہا کہ پاکستانی عوام ہمیشہ اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ رہے ہیں اور ساتھ رہیں گے کیونکہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے ۔کشمیر سیمینار کے مہمان خصوصی وزیر ٹرانسپورٹ سندھ سید ناصر شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی فوج انتہائی مستند اور دنیا کی اعلیٰ افواج میں سے ایک ہے ۔انڈیا کی طاقت میں رکاوٹ پاکستان کا ایٹمی طاقت ہونا ہے اور پاکستان کو ایٹمی طاقت بنانے کی ابتداء شہید ذوالفقار علی بھٹو نے کی تھی ۔انہوں نے کہا کہ آج اگر ذوالفقار علی بھٹو زندہ ہوتے تو مسئلہ کشمیر کب کا حل ہو چکا ہوتا ۔انہوں نے کہا کہ کشمیر کے مسئلے پر پیپلز پارٹی سمیت پاکستان کی تمام جماعتیں متحد ہیں ۔انہوں نے کہا کہ سیاست میں عمران خان کا رویہ بہت سخت ہے کیونکہ جب وہ ایمپائر کی انگلی اُٹھنے کی بات کرتے ہیں تو سمجھ سے بالاتر معاملہ بن جاتا ہے ۔ سید ناصر شاہ کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی قربانیوں کا دوسرا نام ہے اور ’’ سی پیک ‘‘ منصوبہ بھی پیپلز پارٹی کا تخیل تھا جو دشمن کو ایک آنکھ نہیں بھاتا اور وہ اس منصوبے کو ختم کرنا چاہتا ہے ، لیکن ہم غیور پاکستانی دشمن کے اس خواب کو کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہونے دیں گے ، انہوں نے کہا کہ یہ دیکھ کر خوشی ہو رہی ہے کہ آج مسئلہ کشمیر پر ہونے والے اس سیمینار میں تمام سیاسی جماعتوں کی نمائندگی موجود ہے اور خاص کر انہوں نے مسلم لیگ ن سپین کے صدر راجو الیگزینڈر کی سیمینار میں آمد کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہاں ہم سب پاکستانی ہیں اور مسئلہ کشمیر سب پاکستانیوں کا مسئلہ ہے ۔انہوں نے کشمیر میں جاری انڈین آرمی کی جارحیت کی بھر پور الفاظ میں مذمت کی ۔سیمینار کے آخر میں محمد اقبال چوہدری نے خطاب کرتے ہوئے نہتے کشمیریوں پر ہونے والے ظلم و ستم کو بند کرنے کی اپیل کرتے ہوئے اقوام متحدہ سے کہا کہ وہ خاموش نہ بیٹھے اور اس مسئلے کو حل کرائے ،انہوں نے شہدائے کشمیر اور پولیس ٹریننگ سکول کوئٹہ کے درجات کی بلندی کے لئے خصوصی دعا ء بھی کرائی ۔