تازہ ترین
یوم آزادی پاکستان چودہ اگست کو ہی منایا جائے گا ، رامبلہ راوال پر شام پانچ بجے ، چوہدری ثاقب طاہر         یوم آزادی پاکستان کا بڑا پروگرام پریشان رامبلہ پر کل 14 اگست شام پانچ بجے منعقد ہو گا         گجرات رائل ٹی وی کے نمائندے پر قاتلانہ حملے کی مزمت کرتے ہیں ، پاکستان پریس کلب پرتگال         ترکی سےیورپ جانے والے 645 افراد گرفتار،پاکستانی شامل         جرمنی، ہیمبرگ کی سپرمارکیٹ میں چاقو کے حملے میں ایک شخص ہلاک ، 6 دیگر افرادزخمی         بارسلونا،سانتاکلومیں میوزیکل فیسٹیول آتشزدگی کے باعث کینسل         مسئلہ کشمیرپرکانفرنس کاانعقادخوش آئندہے،چوہدری لطیف اکبر         عمران کی بدولت آج قوم جشن منارہی ہے،علوی خان         پاکستان کی کمزورخارجہ پالیسی کی وجہ سے مسئلہ کشمیرسردخانے کی زینت بن گیا،چوہدری یاسین         آئرلینڈ،تحریک انصاف،منہاج القرآن کاپانامہ فیصلہ پریوم تشکر         وزیر اعظم پاکستان کی نا اہلی کو مسترد کرتے ہیں ، مسلم لیگ ن سپین         اب آئندہ کس کی باری ہے ، وقت جلد فیصلہ کرے گا ، حاجی اسد حسین         شاہد خاقان عباسی کو بطور وزیر اعظم منتخب ہونے پر مبارک باد پیش کرتے ہیں ، مسلم لیگ ن سپین         مسلم لیگ ن پاکستان میں اپنی حکومت پوری کرے گی ، ایاز عباسی ، ملک شاہد حسین ، خلیم بٹ         کل بھی نواز شریف کے ساتھ تھے ، آج بھی ہیں اور ہمیشہ رہیں گے ، چوہدری محمد ادریس        
1501517514dailyausaf

پاکستان انتہائی پسندیدہ ملک۔۔۔۔۔بھارتی وزیر نے چونکا دینے والا بیان دے ڈالا

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارت نے کہا ہے کہ اس نے پاکستان کو دئیے گئے تجارت کیلئے انتہائی پسندیدہ ملک کے درجے پرنظرثانی کے حوالے سے تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا۔ بھارتی وزیرصنعت و تجارت نرمالا سیتھارامن نے لوک سبھا کے اجلاس میں ا یک سوال کے تحریری جواب میں کہاکہ پاکستان نے تاحال بھارت کو تجارت کیلئے انتہائی پسندیدہ ملک کا درجہ نہیں دیا اور اس نے 1209 اشیاء منفی فہرست میں شامل رکھی ہوئی ہیں جو بھارت سے درآمد نہیں کی جاسکتیں۔

انہوں نے کہاکہ بھارتی حکومت نے پاکستان کو دئیے گئے انتہائی پسندیدہ درجے پرنظرثانی کے حوالے سے تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ عالمی تجارتی تنظیم کے قواعد و ضوابط کے تحت تنظیم کے ہر رکن ملک کو دوسرے ملکوں کی طرف سے انتہائی پسندیدہ ملک کا درجہ دینا ضروری ہے، بھارت نے پہلے ہی پاکستان سمیت تمام رکن ملکوں کو یہ درجہ دیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ انتہائی پسندیدہ ملک کے تحت عالمی تجارتی تنظیم کاہر رکن ملک دوسرے تجارتی ملک کے ساتھ غیر امتیازی برتاؤ کا پابند ہے، پاکستان نے تاحال ہمیں یہ درجہ نہیں دیا اور اس نے صرف137 مصنوعات واہگہ اٹاری بارڈر کے ذریعے بھارت سے منگوانے کی اجازت دی ہوئی ہے۔ دونوں ملکوں کے درمیان2016-17ء میں تجارت کا حجم2.28 ارب ڈالر ہے۔