تازہ ترین
سپین۔تارکین وطن پاکستانی مقامی سیاسی پارٹیوں کا حصہ بنیں ، حافظ عبدالرزاق صادق         سپین۔گستاخانہ خاکوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ، ہزاروں افراد کی شرکت         گریگ فیسٹیول ’’ منجوئیک ‘‘ میں پاکستانی ثقافت کے رنگ ، پاکسانی شعرا نے اپنا کلام سنایا         سپین۔مسلم لیگ کا اجلاس احتجاجی ضرور تھا لیکن کسی کے خلاف نہیں ، عہدیداران         سپین۔مسیحیوں کو اپنا نمائندہ خودمنتخب کرنے کا حق دیا جائے ، راجو الیگزینڈر         میاں نواز شریف کے استقبال کے لئے سپین سے بھی قافلے پاکستان پہنچیں گے ، مسلم لیگ ن سپین         سپین۔ تصویری نمائش میں بے نظیر بھٹو شہید کی تصویر توجہ کا مرکز         سپین۔الیکٹرانک میڈیا نمائندگان کے پلیٹ فارم کے لئے ایگزیکٹو کمیٹی قائم         سپین۔سفیر پاکستان اور قونصل جنرل بارسلونا کی کمیونٹی سے ملاقات         سپین۔بارسلونا کرکٹ کلب کی یونیفارم کی رونمائی اور تقریب تقسیم انعامات ظہیر عباس کی شرکت         سپین۔کشمیر کی آواز سنو سیمینارمیں بیرسٹر سلطان محمود کی شرکت         جنرل سیکرٹری مسلم لیگ ن سپین راجو الیگزینڈر کی جانب سے بیگم کلثوم نواز کی صحت یابی کے لئے دعائیہ تقریب کا اہتمام         چین نے پاکستانیوں کیلئے ویزہ اجراء کو نہایت آسان کر دیا         انڈونیشیا میں کشتی ڈوبنے سے193افراد تاحال لاپتہ         موت سے بچ جانے والے مزید 522 تارکین وطن اٹلی پہنچ گئے، حکومت روکنے میں ناکام        
1501517514dailyausaf

پاکستان انتہائی پسندیدہ ملک۔۔۔۔۔بھارتی وزیر نے چونکا دینے والا بیان دے ڈالا

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارت نے کہا ہے کہ اس نے پاکستان کو دئیے گئے تجارت کیلئے انتہائی پسندیدہ ملک کے درجے پرنظرثانی کے حوالے سے تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا۔ بھارتی وزیرصنعت و تجارت نرمالا سیتھارامن نے لوک سبھا کے اجلاس میں ا یک سوال کے تحریری جواب میں کہاکہ پاکستان نے تاحال بھارت کو تجارت کیلئے انتہائی پسندیدہ ملک کا درجہ نہیں دیا اور اس نے 1209 اشیاء منفی فہرست میں شامل رکھی ہوئی ہیں جو بھارت سے درآمد نہیں کی جاسکتیں۔

انہوں نے کہاکہ بھارتی حکومت نے پاکستان کو دئیے گئے انتہائی پسندیدہ درجے پرنظرثانی کے حوالے سے تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ عالمی تجارتی تنظیم کے قواعد و ضوابط کے تحت تنظیم کے ہر رکن ملک کو دوسرے ملکوں کی طرف سے انتہائی پسندیدہ ملک کا درجہ دینا ضروری ہے، بھارت نے پہلے ہی پاکستان سمیت تمام رکن ملکوں کو یہ درجہ دیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ انتہائی پسندیدہ ملک کے تحت عالمی تجارتی تنظیم کاہر رکن ملک دوسرے تجارتی ملک کے ساتھ غیر امتیازی برتاؤ کا پابند ہے، پاکستان نے تاحال ہمیں یہ درجہ نہیں دیا اور اس نے صرف137 مصنوعات واہگہ اٹاری بارڈر کے ذریعے بھارت سے منگوانے کی اجازت دی ہوئی ہے۔ دونوں ملکوں کے درمیان2016-17ء میں تجارت کا حجم2.28 ارب ڈالر ہے۔