تازہ ترین
سپین۔تارکین وطن پاکستانی مقامی سیاسی پارٹیوں کا حصہ بنیں ، حافظ عبدالرزاق صادق         سپین۔گستاخانہ خاکوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ، ہزاروں افراد کی شرکت         گریگ فیسٹیول ’’ منجوئیک ‘‘ میں پاکستانی ثقافت کے رنگ ، پاکسانی شعرا نے اپنا کلام سنایا         سپین۔مسلم لیگ کا اجلاس احتجاجی ضرور تھا لیکن کسی کے خلاف نہیں ، عہدیداران         سپین۔مسیحیوں کو اپنا نمائندہ خودمنتخب کرنے کا حق دیا جائے ، راجو الیگزینڈر         میاں نواز شریف کے استقبال کے لئے سپین سے بھی قافلے پاکستان پہنچیں گے ، مسلم لیگ ن سپین         سپین۔ تصویری نمائش میں بے نظیر بھٹو شہید کی تصویر توجہ کا مرکز         سپین۔الیکٹرانک میڈیا نمائندگان کے پلیٹ فارم کے لئے ایگزیکٹو کمیٹی قائم         سپین۔سفیر پاکستان اور قونصل جنرل بارسلونا کی کمیونٹی سے ملاقات         سپین۔بارسلونا کرکٹ کلب کی یونیفارم کی رونمائی اور تقریب تقسیم انعامات ظہیر عباس کی شرکت         سپین۔کشمیر کی آواز سنو سیمینارمیں بیرسٹر سلطان محمود کی شرکت         جنرل سیکرٹری مسلم لیگ ن سپین راجو الیگزینڈر کی جانب سے بیگم کلثوم نواز کی صحت یابی کے لئے دعائیہ تقریب کا اہتمام         چین نے پاکستانیوں کیلئے ویزہ اجراء کو نہایت آسان کر دیا         انڈونیشیا میں کشتی ڈوبنے سے193افراد تاحال لاپتہ         موت سے بچ جانے والے مزید 522 تارکین وطن اٹلی پہنچ گئے، حکومت روکنے میں ناکام        
l_420197_105826_updates

مریم نواز 2017ء کی بااثر ترین خواتین میں شامل

عزم و ہمت کی بنیاد پر نام بنانے والی دنیا کی 11 بااثر خواتین کی فہرست میں مریم نواز بھی شامل ہوگئیں۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے ایسی 11 خواتین کی فہرست جاری کی ہے ،جنہوں نے حکومت ، قانون ، معاشرے،فرسودہ رسم ورواج اور زیادیتوں کے خلاف آواز اٹھائی ۔

امریکی اخبار کے مطابق دنیا کی ان 11 بااثر خواتین نے اپنے الفاظ ، ارادوں اور عزائم سے دنیا کے منظر نامے میں اپنی شناخت بنائی ۔

نیویارک ٹائمز نے حال ہی میں پاکستان کے سیاسی میدان میں قدم رکھنے والی مریم نواز شریف کو بھی دنیا کی باثر خواتین کی فہرست میں شامل کیا ہے۔

والد نواز شریف کی نااہلی کے خلاف جدو جہد کرتی مریم نواز شریف نے مختصر ترین عرصے میں دنیا کی طاقتور ترین خاتون کے طور پر نمایاں مقام حاصل کیا۔

نیویارک ٹائمز کے مطابق مریم نواز شریف مختصر ترین عرصے میں بھی اپنی اثر انگیز جدوجہد سے سال کی با اثر خواتین میں شامل ہوگئیں ۔

خواتین کے جائز حقوق اور زیادتیوں کے لیے آواز اٹھانے والی، جیل کی سختیاں جھیلنے والی اور امید افزا لفظوں سے زندگی میں رنگ بھرنے والی ان خواتین میں سعودی عرب، انڈونیشیا، جرمنی، اٹلی، سوئیڈن، فرانس، برما، ترکی اور چین کی باہمت خواتین شامل ہیں۔