تازہ ترین
سپین۔تارکین وطن پاکستانی مقامی سیاسی پارٹیوں کا حصہ بنیں ، حافظ عبدالرزاق صادق         سپین۔گستاخانہ خاکوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ، ہزاروں افراد کی شرکت         گریگ فیسٹیول ’’ منجوئیک ‘‘ میں پاکستانی ثقافت کے رنگ ، پاکسانی شعرا نے اپنا کلام سنایا         سپین۔مسلم لیگ کا اجلاس احتجاجی ضرور تھا لیکن کسی کے خلاف نہیں ، عہدیداران         سپین۔مسیحیوں کو اپنا نمائندہ خودمنتخب کرنے کا حق دیا جائے ، راجو الیگزینڈر         میاں نواز شریف کے استقبال کے لئے سپین سے بھی قافلے پاکستان پہنچیں گے ، مسلم لیگ ن سپین         سپین۔ تصویری نمائش میں بے نظیر بھٹو شہید کی تصویر توجہ کا مرکز         سپین۔الیکٹرانک میڈیا نمائندگان کے پلیٹ فارم کے لئے ایگزیکٹو کمیٹی قائم         سپین۔سفیر پاکستان اور قونصل جنرل بارسلونا کی کمیونٹی سے ملاقات         سپین۔بارسلونا کرکٹ کلب کی یونیفارم کی رونمائی اور تقریب تقسیم انعامات ظہیر عباس کی شرکت         سپین۔کشمیر کی آواز سنو سیمینارمیں بیرسٹر سلطان محمود کی شرکت         جنرل سیکرٹری مسلم لیگ ن سپین راجو الیگزینڈر کی جانب سے بیگم کلثوم نواز کی صحت یابی کے لئے دعائیہ تقریب کا اہتمام         چین نے پاکستانیوں کیلئے ویزہ اجراء کو نہایت آسان کر دیا         انڈونیشیا میں کشتی ڈوبنے سے193افراد تاحال لاپتہ         موت سے بچ جانے والے مزید 522 تارکین وطن اٹلی پہنچ گئے، حکومت روکنے میں ناکام        
l_434217_124416_updates

دورہ نیوزی لینڈ مایوس کن، سرفراز کی کارکردگی پر سوالات

قومی کرکٹ ٹیم کا جاری دورہ نیوزی لینڈ مایوس کن ثابت ہورہا ہے جبکہ سرفراز احمد کی کارگردگی پر بھی سوال اٹھنے لگے ہیں۔

کرکٹ حلقوں میں یہ بات زیر بحث ہے کہ آخر چیمپئنز ٹرافی کے چیمپئن کو ایسا کیا ہو گیاکہ جس پر وسیم اکرام کو یہ کہنا پڑا کہ پاکستانی ٹیم میں کوئی ایسا بیٹسمین نظر نہیں آرہا جو نیوز ی لینڈ میں سنچری کرسکے۔

نیوزی لینڈ میں جاری سیریز میں پاکستان کی کارگردگی مایوس کن رہی، لگاتار تین میچز میں قومی ٹیم کی شکست نے اس کی کارگردگی اور سرفراز کی کپتانی پر سوال کرنے شروع کر دیئے۔

Pak-02

ہار جیت کھیل کا حصہ ہے جب دو ٹیمیں مدمقابل ہوتی ہیں تو ایک نے ہارنا اور دوسری کو جیتنا ہوتا ہے مگر ہار وہ جس میں لڑ کر ہارا جائے۔ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان کھیلے گئے تیسرے ایک روزہ میچ میں پاکستانی ٹیم کو جس بری طریقے سے شکست کا سامنا کرنا پڑا وہ باعث تشویش اور پریشان کن ہے۔

گزشتہ تین میچز میں اگر بیٹسمینوں کی کارگردگی کے اعداد و شمار دیکھیں تو اظہر علی نے 3 میچز میں صرف 12 رنز بنائے ، فخر زمان کے2 میچز میں84 رنز ہیں۔ امام الحق ایک میچ کھیل کر صرف 2 رنز ہی اسکور کر سکے۔

مڈل آرڈر کی بات کی جائے تو بابر اعظم کی کارگردگی کچھ خاص نہیں رہی انہوں نے تین میچز میں18 رنز بنائے ہیں جبکہ محمد حفیظ نے 61 اور شعیب ملک نے 43 رنز بنائے ہیں۔

Pak-04

ٹیم کے قائد سرفراز احمد کی کارگردکی پر ایک اورسوال یہ بھی کھڑا ہو رہا ہے کہ سوائے سری لنکا سے کھیلے گئے چیمپئن ٹرافی کے میچ میںسرفراز احمد کی بیٹنگ کوئی خاص نہیں رہی اور نیوزی لینڈ سے جاری سیریز کے3 میچز میںصرف 28 رنز بناسکے ہیں۔

دوسری جانب پاکستان کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر کا کہنا ہے کہ پاکستان ٹیم کو نیوزی لینڈ کی کنڈیشنز سوٹ نہیں کر رہیں۔ نیوزی لینڈ کی کنڈیشنز میں بیٹنگ کرنا سیکھنا ہو گا، بیٹسمین اس سے اچھا کھیل سکتے ہیں، اسی لئے کھلاڑیوں کو دباؤ سے نکال کر آزادانہ کھیلنے کی ترغیب دی جارہی ہے۔

گو کے سیریز میں ابھی دو ون ڈے میچز اور تین ٹی 20میچز ہونا باقی ہیں، دیکھتے ہیں کہ کیا سرفراز الیون میں کوئی مثبت تبدیلی آئے گی یا گزشتہ 3میچز کی ہار کے سائے اس پر برقرار رہیں گے۔