تازہ ترین
زبیر گل کے خلاف ہونے والی سازش تمام تارکین وطن کے خلاف سازش ہے ،لیگی عہدیداران         مسلم لیگ ن سپین کے صدر ایاز عباسی اور سرپرست اعلی حاجی اسد حسین کی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی انوشہ رحمان سے ملاقات         پاکستانی کمیونٹی کے مسائل کا حل اؤلین ترجیح ہو گی ، خیام اکبرسفیر پاکستان میڈرڈ         مسلم لیگ ن سپین آج شام سات بجے کایئے چلی میں جشن منائے گی ، مٹھائی تقسیم کی تقریب بھی ہو گی         کشمیریوں پر ایک ماہ میں 13 لاکھ پیلٹ گنز فائر کیےگئے،کشمیر پولیس         چار روزہ ورلڈ موبائل کانگریس بارسلوناکا اختتام ، انوشہ رحمان کی شرکت         سوسائٹی فار کرائسٹ اور مسلم لیگ ن سپین کی سانحہ شاہدرہ پر مشترکہ پریس کانفرنس         پاکستانی سیاست کے یورپی ممالک میں مقیم پاکستانیوں پر اثرات ، پاک نیوز سروے رپورٹ         MWC 2018: the biggest news from Mobile World Congress in Barcelona         پاکستان پیپلز پارٹی برطانیہ میں تقرریوں کا سلسلہ جاری         بھارتی لیجنڈری اداکارہ سری دیوی انتقال کرگئیں         کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے لاہور قلندرز کو 9 وکٹوں سے ہرا دیا         ویسٹ انڈیز کا دورئہ پاکستان خطرات سے دوچار         سائرہ پیٹر کی پی لیک فیسٹیول میں شاندار پرفارمنس         اردوان نے اپنے بدترین دشمن سے ہاتھ ملا لیا        
l_443438_084521_updates

ایران میں حجاب مخالف احتجاج،29خواتین گرفتار

ایران میں حجاب کی پابندی کیخلاف احتجاج کرنے پر 29 خواتین کو گرفتار کر لیا گیاہے، کریک ڈاؤن کے باوجود حجاب کیخلاف احتجاج کا سلسلہ بڑھتا چلا جارہا ہے ۔

حجاب کی پابندی کیخلاف ایرانی خواتین کا احتجاج سوشل میڈیا سے نکل کر تہران کے چوراہوں پر آگیا ہےاور دائرہ بڑھتا ہی چلا جارہا ہے ۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق حجاب مخالف احتجاج کا آغاز 27دسمبر 2017ء کو اس وقت ہوا جب 31سالہ ودا مواحد نے تہران کے خیابان انقلاب کے چبوترے پر چڑھ کر اپنا اسکارف سر سے اتارکر ڈنڈی پر لہرایا تھا ،جس کے بعد خاتون کو گرفتار کیا گیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ودا مواحدی کی گرفتاری کے بعد حجاب کیخلاف احتجاج میں گرفتاریوں کا غصہ بھی شامل ہوگیا اور ایک کے ایک خاتون تہران کی سڑکوں پر احتجاجا اپنا حجاب سر سے اتار کر لہراتی رہیں ۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اور اس کے بعد انہیں گرفتار بھی کیا جاتا رہا ، ایرانی حکام نے گرفتار خواتین پر عوامی بدنظمی پیدا کرنے کی دفعات عائد کی ہیں ،۔ جن کی ضمانت کے لیئے ایک کروڑ روپے سے زائد رقم مقرر کی گئی ہے ۔

ایرانی پراسیکیوٹر جنرل جعفر منتظری کا کہنا ہے کہ گرفتار خواتین نے بچکانہ طرز عمل اختیار کیا اور یہ کام ممکنہ طور پر بیرون ملک موجود عناصر کے اشارے پر کیا جارہا ہے ۔