تازہ ترین
گریگ فیسٹیول ’’ منجوئیک ‘‘ میں پاکستانی ثقافت کے رنگ ، پاکسانی شعرا نے اپنا کلام سنایا         سپین۔مسلم لیگ کا اجلاس احتجاجی ضرور تھا لیکن کسی کے خلاف نہیں ، عہدیداران         سپین۔مسیحیوں کو اپنا نمائندہ خودمنتخب کرنے کا حق دیا جائے ، راجو الیگزینڈر         میاں نواز شریف کے استقبال کے لئے سپین سے بھی قافلے پاکستان پہنچیں گے ، مسلم لیگ ن سپین         سپین۔ تصویری نمائش میں بے نظیر بھٹو شہید کی تصویر توجہ کا مرکز         سپین۔الیکٹرانک میڈیا نمائندگان کے پلیٹ فارم کے لئے ایگزیکٹو کمیٹی قائم         سپین۔سفیر پاکستان اور قونصل جنرل بارسلونا کی کمیونٹی سے ملاقات         سپین۔بارسلونا کرکٹ کلب کی یونیفارم کی رونمائی اور تقریب تقسیم انعامات ظہیر عباس کی شرکت         سپین۔کشمیر کی آواز سنو سیمینارمیں بیرسٹر سلطان محمود کی شرکت         جنرل سیکرٹری مسلم لیگ ن سپین راجو الیگزینڈر کی جانب سے بیگم کلثوم نواز کی صحت یابی کے لئے دعائیہ تقریب کا اہتمام         چین نے پاکستانیوں کیلئے ویزہ اجراء کو نہایت آسان کر دیا         انڈونیشیا میں کشتی ڈوبنے سے193افراد تاحال لاپتہ         موت سے بچ جانے والے مزید 522 تارکین وطن اٹلی پہنچ گئے، حکومت روکنے میں ناکام         برطانیہ کی یورپی یونین سے علیحدگی کا بل کامنز میں منظور، ووٹ نے عوام کی طاقت ثابت کردی، وزیراعظم         ان گنت طبی فوائد لیے چھوٹا سا بیج ’’تخم بالنگا‘‘        
l_443438_084521_updates

ایران میں حجاب مخالف احتجاج،29خواتین گرفتار

ایران میں حجاب کی پابندی کیخلاف احتجاج کرنے پر 29 خواتین کو گرفتار کر لیا گیاہے، کریک ڈاؤن کے باوجود حجاب کیخلاف احتجاج کا سلسلہ بڑھتا چلا جارہا ہے ۔

حجاب کی پابندی کیخلاف ایرانی خواتین کا احتجاج سوشل میڈیا سے نکل کر تہران کے چوراہوں پر آگیا ہےاور دائرہ بڑھتا ہی چلا جارہا ہے ۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق حجاب مخالف احتجاج کا آغاز 27دسمبر 2017ء کو اس وقت ہوا جب 31سالہ ودا مواحد نے تہران کے خیابان انقلاب کے چبوترے پر چڑھ کر اپنا اسکارف سر سے اتارکر ڈنڈی پر لہرایا تھا ،جس کے بعد خاتون کو گرفتار کیا گیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ودا مواحدی کی گرفتاری کے بعد حجاب کیخلاف احتجاج میں گرفتاریوں کا غصہ بھی شامل ہوگیا اور ایک کے ایک خاتون تہران کی سڑکوں پر احتجاجا اپنا حجاب سر سے اتار کر لہراتی رہیں ۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اور اس کے بعد انہیں گرفتار بھی کیا جاتا رہا ، ایرانی حکام نے گرفتار خواتین پر عوامی بدنظمی پیدا کرنے کی دفعات عائد کی ہیں ،۔ جن کی ضمانت کے لیئے ایک کروڑ روپے سے زائد رقم مقرر کی گئی ہے ۔

ایرانی پراسیکیوٹر جنرل جعفر منتظری کا کہنا ہے کہ گرفتار خواتین نے بچکانہ طرز عمل اختیار کیا اور یہ کام ممکنہ طور پر بیرون ملک موجود عناصر کے اشارے پر کیا جارہا ہے ۔