تازہ ترین
سانپ نے آدمی کو کاٹا اور پھر آدمی نے اپنی بیوی کو کاٹ لیا، لیکن زندہ کون بچا؟ ناقابل یقین واقعہ         صدی کا سب سے بڑا مقدمہ، تاریخ کے سب سے بڑے منشیات سمگلر ایل چیپو کو سخت ترین سزا سنادی گئی         28 سالہ دلہن نے 70 سالہ دولہے کو لوٹ لیا         امیر ترین ہسپانوی سپر ماڈل کی مفلسی، سڑک پر آگئی         محمد اقبال چوہدری کے تایا جان کی روح کے ایصال ثواب کے لئے قران خوانی اور ختم شریف میں معززین کی شرکت         شفقت علی رضا اور رضوان کاظمی کی پالسن کے اونر چوہدری امانت علی وڑائچ اور محمد بلال علی سے ملاقات         سپین ۔کشمیری حریت پسند مقبول احمد بٹ شہید کی 35ویں برسی کی تقریب         بہاماس میں ہیٹی سے تارکین وطن کو لے جانے والی کشتی الٹنے سے 28 مسافر ڈوب گئے         بحیرہ روم میں ہلاک ہونے والے پاکستانیوں کی تعداد میں اضافہ         لیبیا کے قریب بحرہ احمر میں کشتی الٹنے سے 90 تارکین ڈوب کر ہلاک ہوگئے         67 سالہ دولہے اور 24 سالہ دلہن کی جان کو خطرہ         پاکستان اب ای پاسپورٹ اشو کرے گا تیاریاں مکمل         اوسپتالیت میں بین المذاہب ہم آہنگی سیمینار ، پاکستانیوں کی جانب سے طاہر رفیع کی شرکت         چوہدری شوکت آف قرطبہ ریسٹورنٹ کا حافظ عبدالرزاق صادق کے اعزاز میں عشائیہ ، معززین کی شرکت         دوران پروازجہاز کے انجن میں آگ لگ گئی ، مسافر محفوظ رہے        
1618171-bilawal-1516903030

نوازشریف عدالتی اصلاحات نہیں اپنی عدلیہ چاہتے ہیں،بلاول

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو  زرداری نے کہا ہے کہ نوازشریف عدالتی اصلاحات نہیں اپنی عدلیہ چاہتے ہیں، انہوں نے کبھی پارلیمنٹ کو عزت نہیں دی۔

بلاول بھٹو نے لاہور میں عاصمہ جہانگیر کے گھر پہنچ کر اہل خانہ سے تعزیت کی ،میڈیا سے گفتگو میں پی پی چیئرمین نے کہا کہ اپنی کرپشن بچانے کے لیے نوازشریف پارلیمنٹ کاسہارا لے رہے ہیں،حکومت رونا دھونا بند کرےاور اپنا کام کرے۔

ان کا کہنا تھا کہ عدالتی اصلاحات 3 ماہ میں نہیں کی جانی چاہییں،سندھ اور پنجاب کےسیاستدانوں میں جو فرق نیب کررہا ہے وہ آج تک سمجھ نہیں آیا۔

اس موقع پر بلاول بھٹو نے کہا کہ عاصمہ جہانگیر ایسا پاکستان چاہتی تھیں جہاں مرد اور خواتین میں کوئی تفریق نہ ہو، لاہور کے پروگریسو سوچ رکھنےوالوں کوپیغام دیتاہوں کہ مایوس نہ ہوں، ترقی پسند خوشحال لاہور واپس بنائیں گے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ مسلم لیگ ن ابھی بھی عدلیہ کو ڈکٹیٹ کرنا چاہتی ہے کہ فیصلہ کیا ہونا چاہیے،یہ بہت بڑا مذاق ہے کہ نوازشریف ووٹ کو عزت دو کی تحریک چلارہے ہیں،جب یہ وزیراعظم تھے تو4 بار قومی اسمبلی اور2بارسینیٹ آئے تھے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے مزید کہا کہ نوازشریف پارلیمنٹ کاسہاراتب لیتے جب وہ 4 سال وزیراعظم تھے،اب کرپشن بچانے کے لئے لے رہے ہیں،آئین سپریم ہے، پارلیمنٹ اس آئین میں ترمیم کرسکتی ہے۔

ان کا کہناتھاکہ ہم جانتےہیں کہ عدلیہ اورپارلیمنٹ کے پاس کیا کیا اختیارات ہیں،نوازشریف عدالتی اصلاحات نہیں چاہتے وہ اپنی عدلیہ چاہتےہیں،اس طرح سے عدالتی اصلاحات نہیں لائی جاسکتیں۔

بلاول بھٹو نے یہ بھی کہا کہایک ایساآدمی جوتین دفعہ وزیراعظم رہا،جس کی اپنی حکومت ہے وہ اپوزیشن کا کردار ادا کررہا ہے، حکومت رونا دھونا بند کرے، اپنا کام کرے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عدالتی اصلاحات 3 ماہ میں نہیں کی جانی چاہئیں،ملی مسلم لیگ اور تحریک لبیک نئے کھلونے ہیں۔