تازہ ترین
یوم پاکستان مشاعرہ ، ایک شام فاخرہ انجم کے نام         پاک، اسپین اکنامک ڈپلومیسی، شفقت علی رضا         یوم پاکستان پروگرام کی کامیابی قونصل جنرل کی ان تھک محنت کا نتیجہ ہے ،امتیاز آکیہ         طاہر رفیع اور اجمل رشید بٹ ہسپانوی الیکشن میں امیدوار ہوں گے         Pakistan vs England T20 Live | 05 May 2019         Pakistan vs Australia 2nd ODI Live | 24 March 2019 | Ptv Sports Live         Thousands of Catalan separatists march in Madrid         یوم پاکستان اور ڈاکٹر محمد اسد کے عنوان سے اسپین کے تاریخی شہر غرناطہ میں پہلے پروگرام کا انعقاد         میکسیکو:حادثے میں 25 تارکین وطن ہلاک         برطانیہ میں امیگریشن اب پبلک کیلئے تشویش کابڑا موضوع نہیں رہا، سٹڈی میں انکشاف         17 سالہ جوڈی کے قتل کے شبہ میں دوسرا شخص گرفتار         ٹیپو سلطان کون تھا؟ مورخین اور ماہرین کی رائے         میکسیکو نائٹ کلب پر فائرنگ ،15 ہلاک         دُبئی: پاکستانی ڈرائیور نے چوری کرنے پر بھارتی ملازم کو پکڑوا دیا         موٹرولا کے Razr فولڈ ایبل فون کے فیچرز سامنے آ گئے        
pic-net-spain

میاں نواز شریف کے استقبال کے لئے سپین سے بھی قافلے پاکستان پہنچیں گے ، مسلم لیگ ن سپین

بارسلونا(پاک نیوز) عدالتی فیصلے نامنظور نامنظور ، میاں نواز شریف کے خلاف عدالتی فیصلے انتقام پر مبنی ہیں ، کسی کو بغیر ثبوت کے سزا سنانا زیادتی ہے ، ان خیالات کا اظہار پاکستان مسلم لیگ ن سپین کے زیر اہتمام ہونے والے احتجاجی اجلاس میں مقررین نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کیا ۔ تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن سپین کے زیر اہتمام سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف ان کی بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن صفدر کو نیب کی عدالت سے جیل کی سزائیں اور بھاری بھرکم جرمانوں کی سزا سنانے کے خلاف ہونے والے اس احتجاجی اجلاس میں عہدیداران اور ممبران کی کثیر تعداد نے اپنے بازووں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر شرکت کی ۔ بارسلونا کے مقامی ریسٹورنٹ کے ہال میں ہونے والے اجلاس میں شرکاء نے کہا کہ ہم 13جولائی کو سپین سے قافلے لے کر پاکستان جائیں گے اور اپنے قائد محترم کا استقبال کریں گے ۔ اس موقع پر سرپرست اعلیٰ حاجی اسد حسین ، جنرل سیکرٹری راجو الیگزینڈر ، نائب صدر چوہدری محمد ادریس ، سفیر اکبر بھٹی ، مسلم لیگ ن کاتالونیا کے صدر راجہ ساجد حسین ، ایاز عباسی و شاہد ملک اور دوسرے مقررین نے کہا کہ فاضل جج نے اپنے فیصلے میں لکھا ہے کہ میاں نواز شریف کے خلاف کوئی ثبوت نہیں ملا اس کے باوجود سزا سنانا نا انصافی ہے ، انہوں نے کہا کہ جس نے پاکستان کو ایٹمی طاقت بنایا ، پاکستان میں سڑکوں کے جال بچھائے ، سی پیک منصوبہ شروع کیا ،وطن عزیز کو ترقی کی جانب گامزن کیا اُس جمہوری وزیر اعظم کو بنا ثبوت پہلے نا اہل کیا گیا اور اب جیل کی سزا سنا دی گئی ، انہوں نے کہا کہ ایک خاتون کو جیل کی سزا سنانا جو نہ تو ایم این اے ہے اور نہ ہی ایم پی اے اُس کا جرم صرف یہ ٹھہرا کہ وہ میاں نواز شریف کی بیٹی مریم ہے کہاں کا انصاف ہے ؟ مقررین کا کہنا تھا کہ میاں نواز شریف اور مریم نواز بسترِ مرگ پر پڑی بیگم کلثوم نواز کو لندن میں چھوڑ کر عوام کو ترجیح دیتے ہوئے پاکستان جا رہے ہیں کیونکہ وہ سمجھتے ہیں کہ عوام کی ذمہ داری ان سے تقاضاکرتی ہے کہ یہ ذمہ داری ایک فرد کی بیماری سے زیادہ اہمیت کی حامل ہے ۔مقررین کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستانی عوام کا فیصلہ عدالتی فیصلے بالکل بر عکس ہو گا اور 25جولائی کو قومی انتخابات کا نتیجہ بتا دے گا کہ پاکستان سے محبت کرنے اور اس ملک کوترقی کی راہ پر گامزن کرنے والی پارٹی مسلم لیگ ن ہی ہے ۔مقررین کا کہنا تھا بیگم کلثوم نواز کا بستر مرگ پر ہونا اور وطن عزیز میں قومی انتخابات کے بالکل قریب میاں نواز شریف اور ان کی بیٹی کو سزا سنایا جانا پاکستانی عوام کو مشتعل کرنے کا ایک بہانہ ہے تاکہ انارگی پھیلے اور ملکی امن سبو تاژ کیا جا سکے ۔ انہوں نے کہا کہ عدالتوں میں یک طرفہ فیصلے نہ کئے جائیں ورنہ ملک میں پھیلنے والی انارگی کے ذمہ دار یہی غلط عدالتی فیصلے ہوں گے ، انہوں نے کہا کہ احتساب صرف نواز شریف کا ہی کیوں دوسرے سیاستدانوں کے خلاف عدالتی فیصلے کیوں نہیں ؟مقررین کا کہنا تھا کہ عمران خان نے خود مانا تھا کہ میری آف شوور کمپنیاں ہیں لیکن اسے سزا نہیں دی گئی ، پانامہ سے شروع ہونے والا کیس اقامہ تک پہنچا اور اب یہی کیس میاں نواز شریف کے بچوں کے پاس موجود جائیداد تک آن پہنچا ہے جس سے صاف ظاہر ہے کہ عدالتیں اور دوسرے سرکاری ادارے میاں نواز شریف کے خاندان کو ہی ٹارگٹ کئے ہوئے ہیں ۔اجلاس کے اختتام پر پاکستان میں امن و امان قائم رہنے ،بیگم کلثوم نواز کی صحت یابی اور میاں نواز شریف کی حفاظت کے لئے دعائیں بھی کی گئیں ۔