تازہ ترین
بارسلونا: آل پارٹیز کشمیر کانفرنس، کشمیری و پاکستانی کمیونٹی کی شرکت         پاکستانی کمیونٹی کو ترقی کی منازل طے کرنے کے لئے راجہ ضیا صدیق کا خوبصورت مشورہ         وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی دبنگ تقریر پر چوہدری ایاز مٹھانہ چک کے تاثرات         چوہدری افضال وڑائچ کے والد کی وفات پر پاکستانی کمیونٹی کا اظہار افسوس اور دعائے مغفرت         سابق وزیر خزانہ رانا محمد افضل کی وفات پر مسلم لیگ ن سپین کا اظہار افسوس         انٹرنیشنل امن کانفرنس سپین ،مولانا عبدالخبیر آزاد کی شرکت         سپین میں امراض جگر کے اسپیشلسٹ پہلے پاکستانی ڈاکٹر عرفان مجید راجہ سے بات چیت، پاک نیوز رپورٹ         کاتالان کرکٹ لیگ فائنل کے مہمان خصوصی چوہدری عزیز امرہ ونر ٹرافی دیتے ہوئے         کاتالان کرکٹ لیگ کی چیمپیئن پاک آئی کیئر نے اپنی جیت کشمیری بھائیوں کے نام کر دی         قونصلیٹ آفس بارسلونا میں کشمیر کے حق میں احتجاج مختلف شعبہ ہائے زندگی کے معززین کی شرکت         آل پاکستان فیملی ایسوسی ایشنز، اظہار ایسوسی ایشن، ایسوسی ایشن پیس فار پیس کے زیر اہتمام ہر سال کی طرح اس سال بھی ہسپیتالت میں پاکستانی بچوں میں تعلیم کو فروغ دینے کے سلسلے میں پروگرام Back to school کا انعقاد کیا         قونصل جنرل بارسلونا عمران علی چوہدری کی کاتالونیا کے نیشنل ڈے کی تقریبات میں شرکت         قونصل جنرل بارسلونا عمران علی چوہدری کی کاتالونیا کے صدر کوائم تورا سے ملاقات         قونصل جنرل بارسلونا عمران علی چوہدری کی صوبائی فارن منسٹر الفریڈ بوش ای پاسکوال سے ملاقات         ظہیر جنجوعہ نے نئی سفارتی ذمہ داریاں سنبھال لیں        

عرفان صدیقی کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا

اسلام آباد کی عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے مشیر اور کالم نویس عرفان صدیقی کو مقدمے سے بری کرنے کی درخواست مسترد کرتے ہوئے انہیں 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر اڈیالہ جیل بھیجنے کا حکم دے دیا۔

عرفان صدیقی کو اسلام آباد میں مجسٹریٹ مہرین بلوچ کی عدالت میں پیش کیا گیا، جہاں پولیس نے عرفان صدیقی کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کی استدعا کی۔

واضح رہے کہ پولیس نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے مشیر عرفان صدیقی کو کرایہ داری ایکٹ کی خلاف ورزی پر گزشتہ شب گرفتار کیا تھا۔

عرفان صدیقی کے بیٹے کا کہنا تھا کہ عرفان صدیقی کو اسلام آباد پولیس نے گھر کے باہر سے گرفتار کر کے تھانہ رمنا اسلام آباد منتقل کیا تھا۔

اس حوالے سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ نون کی رہنما و ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا کہ عرفان صدیقی کو وزیر اعظم عمران خان کے حکم پر وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے گرفتار کروایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس گرفتاری پر میں وزیر داخلہ کو نامزد کروں گی، عرفان صدیقی کا قصور یہ ہے کہ وہ دانشور ہیں، مصنف ہیں، ماہرِ تعلیم ہیں جبکہ موجودہ حکومت کا ان چیزوں سے کوئی لگاؤ نہیں ہے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عرفان صدیقی کے خلاف وہ مقدمہ درج کیا گیا جو ماضی میں ہونے والے بھینس چوری کے مقدمے سے بھی گیا گزرا ہے، رات کے اندھیرے میں عرفان صدیقی پر جو ایف آئی آر درج ہوئی وہ جعلی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عرفان صدیقی کا قصور ہے کہ ان کا نام نواز شریف کے ساتھ جڑا ہوا ہے، وہ گھر جو عرفان صدیقی کے نام پر نہیں، اس کی ایف آئی آر کیسے کاٹی گئی؟

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عرفان صدیقی کے سیدھے ہاتھ پر ہتھکڑی لگائی گئی، اس حکومت نے استادوں کو ہتھکڑی لگانے کی روایت شروع کی ہوئی ہے، یہ ہے عمران خان کی مدینہ کی ریاست۔

انہوں نے وزیر اعظم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ عمران صاحب کیا مسلم لیگ نون کے رہنماؤں کو جیل بھیجنے سے عوام کو روٹی مل جائے گی؟

مریم اورنگزیب نے استفسار کیا کہ علیمہ باجی کو ایف بی آر کے سامنے ہتھکڑیاں لگا کر کیوں پیش نہیں کیا جاتا، جہانگیر ترین کو ہتھکڑیاں کیوں نہیں لگائی گئیں، کیوں پی ٹی وی پر حملہ کرنے والے کو ہتھکڑیاں نہیں لگائی گئیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج عرفان صدیقی کو نہیں پورے ملک کے ماہرینِ تعلیم کو ہتھکڑی لگائی گئی ہے، آج آپ مہنگائی دور نہیں کر سکتے تو کیا ہتھکڑیاں لگانا شروع کر دیں گے؟

مسلم لیگ نون کی ترجمان نے یہ بھی کہا کہ آپ سب کو ہتھکڑیاں لگا دیں لیکن اب کوئی پیچھے ہٹنے والا نہیں، آج آپ نے جو گری ہوئی حرکت کی ہے، قوم اور تاریخ آپ کو اس پر کبھی معاف نہیں کرے گی۔