تازہ ترین
بارسلونا: آل پارٹیز کشمیر کانفرنس، کشمیری و پاکستانی کمیونٹی کی شرکت         پاکستانی کمیونٹی کو ترقی کی منازل طے کرنے کے لئے راجہ ضیا صدیق کا خوبصورت مشورہ         وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی دبنگ تقریر پر چوہدری ایاز مٹھانہ چک کے تاثرات         چوہدری افضال وڑائچ کے والد کی وفات پر پاکستانی کمیونٹی کا اظہار افسوس اور دعائے مغفرت         سابق وزیر خزانہ رانا محمد افضل کی وفات پر مسلم لیگ ن سپین کا اظہار افسوس         انٹرنیشنل امن کانفرنس سپین ،مولانا عبدالخبیر آزاد کی شرکت         سپین میں امراض جگر کے اسپیشلسٹ پہلے پاکستانی ڈاکٹر عرفان مجید راجہ سے بات چیت، پاک نیوز رپورٹ         کاتالان کرکٹ لیگ فائنل کے مہمان خصوصی چوہدری عزیز امرہ ونر ٹرافی دیتے ہوئے         کاتالان کرکٹ لیگ کی چیمپیئن پاک آئی کیئر نے اپنی جیت کشمیری بھائیوں کے نام کر دی         قونصلیٹ آفس بارسلونا میں کشمیر کے حق میں احتجاج مختلف شعبہ ہائے زندگی کے معززین کی شرکت         آل پاکستان فیملی ایسوسی ایشنز، اظہار ایسوسی ایشن، ایسوسی ایشن پیس فار پیس کے زیر اہتمام ہر سال کی طرح اس سال بھی ہسپیتالت میں پاکستانی بچوں میں تعلیم کو فروغ دینے کے سلسلے میں پروگرام Back to school کا انعقاد کیا         قونصل جنرل بارسلونا عمران علی چوہدری کی کاتالونیا کے نیشنل ڈے کی تقریبات میں شرکت         قونصل جنرل بارسلونا عمران علی چوہدری کی کاتالونیا کے صدر کوائم تورا سے ملاقات         قونصل جنرل بارسلونا عمران علی چوہدری کی صوبائی فارن منسٹر الفریڈ بوش ای پاسکوال سے ملاقات         ظہیر جنجوعہ نے نئی سفارتی ذمہ داریاں سنبھال لیں        
mian-nawaz-sharif-pak-pattan-land-case-jail

پاک پتن اراضی کیس ، اصل کہانی منظر عام پر آگئی ، نواز شریف کے گرد گھیرا تنگ

کوٹ لکھپت جیل میں سابق وزیر اعظم نوازشریف سے پاکپتن اراضی کیس میں پوچھ گچھ کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ہے۔

محکمہ اینٹی کرپشن کی چار رکنی ٹیم نےپاک پتن اراضی کیس میں تحقیقات کےلیے کوٹ لکھپت جیل  میں سابق وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کی اور انہیں سوالنامہ پیش کیا ۔

تفتیشی ٹیم میں ٹیم ڈائیریکٹر شفاقت اللہ ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر انویسٹی گیشن غضنفر طفیل، اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیگل راشد مقبول اور انسپکٹر ہیڈ کوارٹر زاہد علی شامل تھے۔

ذرائع کے مطابق نواز شریف سے محکمہ اینٹی کرپشن کی تفتیش 40 منٹ تک جاری رہی ،جیل کے ایک علیحدہ کمرے میں 4 رکنی ٹیم نے نواز شریف سے سوالات کئے۔

ذرائع پاکپتن اراضی کیس میں ریکارڈ نواز شریف کے سامنے رکھ کرکہا گیا ’آپ ملزم ہیں‘۔

نوازشریف نے کہا کہ میری وزارت اعلیٰ کے دور کا بہت پرانا کیس ہے،کچھ یاد نہیں،میرے پاس کوئی تفصیل نہیں کیس کی کاپیاں مجھے دیدیں،دیکھ لوں گا۔

اینٹی کرپشن ٹیم نے کہا کہ سیکریٹری ٹوسی ایم نے24گھنٹےمیں الاٹمنٹ کی سمری مانگی اورفیصلہ کردیا۔

نوازشریف نے کہا کہ محکمےنےکیس بناکربھیجا،سیکریٹری نےعجلت میں کام کیاہوگا،وہی بتاسکتا ہے۔

اینٹی کرپشن ٹیم نے کہا کہ محکمےنےالاٹمنٹ کےخلاف سمری بھیجی لیکن سیکرٹری نے12گھنٹےمیں فیصلہ کردیا۔

تفتیشی ٹیم نے کہا کہ وزیراعلیٰ کا اس وقت کا سیکریٹری کہتا ہے نواز شریف کے کہنے پر اراضی الاٹ کی۔

نواز شریف نے جواب دیا کہ اس بارے میں کوئی جواب نہیں دے سکتا، میری قانونی ٹیم جواب دے گی جس کے بعد تفتیشی ٹیم واپس روانہ ہو گئی۔