تازہ ترین
حاجی اسد حسین کی برطانیہ میں سہیل وڑائچ ، طاہر چوہدری اور حمزہ باسط بٹ سے ملاقات         کاتالونیا میں آزادی کی تحریک پھر زور پکڑ گئی ہے         کشمیر اور خالصتان کی آزادی کے لئے ریفرنڈم ٹونٹی ٹونٹی کا اعلان، شفقت علی رضا         علامہ اقبال ؒ کے یوم پیدائش پراوسپتالیت کے اُردو سکول میں شاندار تقریب         بارسلونا: آل پارٹیز کشمیر کانفرنس، کشمیری و پاکستانی کمیونٹی کی شرکت         پاکستانی کمیونٹی کو ترقی کی منازل طے کرنے کے لئے راجہ ضیا صدیق کا خوبصورت مشورہ         وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی دبنگ تقریر پر چوہدری ایاز مٹھانہ چک کے تاثرات         چوہدری افضال وڑائچ کے والد کی وفات پر پاکستانی کمیونٹی کا اظہار افسوس اور دعائے مغفرت         سابق وزیر خزانہ رانا محمد افضل کی وفات پر مسلم لیگ ن سپین کا اظہار افسوس         انٹرنیشنل امن کانفرنس سپین ،مولانا عبدالخبیر آزاد کی شرکت         سپین میں امراض جگر کے اسپیشلسٹ پہلے پاکستانی ڈاکٹر عرفان مجید راجہ سے بات چیت، پاک نیوز رپورٹ         کاتالان کرکٹ لیگ فائنل کے مہمان خصوصی چوہدری عزیز امرہ ونر ٹرافی دیتے ہوئے         کاتالان کرکٹ لیگ کی چیمپیئن پاک آئی کیئر نے اپنی جیت کشمیری بھائیوں کے نام کر دی         قونصلیٹ آفس بارسلونا میں کشمیر کے حق میں احتجاج مختلف شعبہ ہائے زندگی کے معززین کی شرکت         آل پاکستان فیملی ایسوسی ایشنز، اظہار ایسوسی ایشن، ایسوسی ایشن پیس فار پیس کے زیر اہتمام ہر سال کی طرح اس سال بھی ہسپیتالت میں پاکستانی بچوں میں تعلیم کو فروغ دینے کے سلسلے میں پروگرام Back to school کا انعقاد کیا        

ذوالجناح کی تاریخ کیا ہے ؟

ذوالجناح جس پر سوار ہوکر امام حسین علیہ اسلام نے کربلا میں حق و باطل کا معرکہ سر کیا تھا، ذاکرین کا کہنا ہے کہ ذوالجناح کو شہداء کربلا کی یاد میں منعقدہ مجالس اور جلوسوں کا سینگھار بھی کہا جاتا ہے ۔

علماء اکرام کے مطابق یہ گھوڑا جس کا نام ’مرتجس‘ تھا سرکار دوعالم صلی اللہ تعالیٰ علیہ آلہ وسلم کو جنگ میں مال غنیمت کے طور پر ملا تھا، جسے آپ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم نے اپنے نواسے حضرت امام حسین علیہ سلام کو تحفے میں دیا تھا اور آپ نے ہی اسکا نام ذوالجناح یعنی دو پروں والا رکھا تھا ۔

زوالجناح نے کربلا کے میدان میں وفاداری کی اعلیٰ مثال قائم کرتے ہوئے امام ِ عالی مقام کے ساتھ ہی شہادت کا رتبہ حاصل کیا تھا۔

یہی وجہ ہے کہ محبان محمدﷺ اور آل محمد شبیہہ ذوالجناح برآمد کرتے ہیں اور ایام عزا میں اسکا تذکرہ بڑے ہی احترام کے ساتھ کرتے ہیں۔